Breaking News

उत्तर प्रेदश:- योगी जी की विकास की राहें अपनी बदहाली पर आंसू बहा रही है !
उत्तर प्रेदश:- रंगरलियां मना रहे दो जोड़ो की हुई जमकर पिटाई
देश:- प्रधानमंत्री ने कहा कि सामान्य वर्ग के गरीबों के लिए 10 प्रतिशत आरक्षण विधेयक एक ऐतिहासिक कदम है जो गरीबों के लिए सरकार की प्रतिबद्धता को दर्शाता है
देश:- स्वच्छ भारत मिशन खुले में शौच से मुक्त भारत के लक्ष्य प्राप्ति की ओर
देश:- मेघालय में पहली ‘स्वदेश दर्शन’ परियोजना का उद्घाटन
देश:- रेल संरक्षा में भारत-जापान सहयोग के लिए रेलमंत्रालय ने चर्चा रिकॉर्ड पर हस्‍ताक्षर किये |
उत्तर प्रेदशराज्य

انڈین جرنلسٹس ایسوسی ایشن نے جشن آزادی کو جشن منایا ، پرچم کشائی کی۔

By August 16, 2020 No Comments

انڈین جرنلسٹس ایسوسی ایشن نے جشن آزادی کو جشن منایا ، پرچم کشائی کی۔

کانپور نگر ، اتر پردیش۔

یہاں تک کہ دنیا میں پہلا کورونا وبا بھی آزادی پسندوں کو یوم آزادی منانے سے نہیں روک سکا۔
انڈین جرنلسٹ ایسوسی ایشن کے عہدیداروں نے میونسپل آفس طلاق محل رحمانی مارکیٹ چوراہے پر کوڈ پروٹوکول کی پیروی کی سرپرست اعجاز صدیقی ، اشوانی ڈکشٹ اور ضلعی صدر مکیم احمد قریشی نے جسمانی فاصلے پر نقاشی کے ذریعہ پرچم کشائی کی اور ساتھ ہی 74 ویں جشن آزادی کے ساتھ لڈو بانٹتے ہوئے 5 ویں برسی منائی گئی۔
پرچم کشائی کی تقریب میں ساتھی صحافیوں کی حوصلہ افزائی ، سرپرست اعجاز صدیقی اور اشونی ڈکشت۔ صحافت بہادری کا کام ہے ، ملک کی آزادی میں صحافیوں نے اپنے قلم پر انگریز کے چھکے چھڑائے تھے جس کی وجہ سے آج ہم آزاد ہیں۔ وہ ہندوستان میں سانس لے رہے ہیں۔انہوں نے آج صحافت کی گرتی ہوئی سطح پر تشویش کا اظہار کیا اور کہا کہ اگر ہمارے آباواجداد بھی آج قمری بیچنے والے جیسے ہوتے تو ہم شاید انگریزوں کے غلام ہیں۔
ضلعی صدر مکیم قریشی نے بروکر میڈیا پر طنز کیا۔آج کی صحافت نے فرقہ واریت کو پہنا دیا ہے ، آج ، چند صحافیوں نے غیر جانبدار ہونے کی بجائے کسی خاص شخص یا طبقے سے اپنی قلم کا عہد کیا ہے ، یہ قابل مذمت ہے انہوں نے دلالوں پر طنز کرتے ہوئے صحافیوں کے بھیس میں کہا ، جب سے صحافت پیشہ ور ہوگئی ہے ، صحافت کی سطح میں مزید کمی آرہی ہے اور صحافی پیسوں کے لالچ میں اپنے اعتماد کا سودا کررہا ہے۔ رقم کے ل ، آج کچھ صحافی سچ کو جھوٹا اور سچ کو جھوٹا ثابت کرنے پر تلے ہوئے ہیں۔ انہوں نے ساتھی صحافیوں سے کہا کہ وہ سچائی پر قائم رہیں۔ تاکہ مستقبل میں خطرے میں پڑنے والی آزادی کو بچایا جاسکے۔
ایسوسی ایشن کے ضلعی جنرل سکریٹری حفیظ احمد خان نے حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ صحافیوں کی آڑ میں مجرم صحافیوں کے لبادے پہنے ہوئے ہیں حکومت کو صحافت کی آڑ میں جرائم کی سرپرستی کرنے والے صحافیوں کی شناخت اور تفتیش کرنی چاہئے۔ یہی وجہ ہے کہ آج صحافت کی سطح روز بروز گرتی جارہی ہے۔
پرچم کشائی کے موقع پر انجمن کے صحافی ، ناظم علی خان ، امت ترویدی ، قمر عالم ، دشیانت سنگھ ، ذیشان خان ، رانو خان ​​، زید ، حذیفہ ، امان شرما ، انکیت مشرا ، سندیپ ، نفیس وغیرہ موجود تھے۔

Leave a Reply